بھارتی بحریہ کے ذریعے وضع کیے گیے کم لاگت والے اختراعی پی پی ای کو پیٹنٹ کرانے کا عمل –بڑے پیمانے پر اس کی تیاری کا راستہ ہموارہوا

بھارتی بحریہ کے ذریعہ وضع کیا گیا طبی عملے کو تحفظ فراہم کرنے والا اکوپمنٹ (پی پی ای) کو بڑے پیمانے پر تیزی سے تیار کرنے کے ایک اہم قدم کے...

بھارتی بحریہ کے ذریعہ وضع کیا گیا طبی عملے کو تحفظ فراہم کرنے والا اکوپمنٹ (پی پی ای) کو بڑے پیمانے پر تیزی سے تیار کرنے کے ایک اہم قدم کے طور پر وزارت دفاع کے تحت  املاک دانشوراں سہولت سیل (آئی پی ایف سی) کی جانب سے سائنس و ٹیکنالوجی کی وزارت کے تحت مصروف عمل ایک صنعت یعنی قومی تحقیق ترقیات  کارپویشن کے ساتھ مل کر کامیابی کے ساتھ ایک پیٹنٹ درخواست داخل کی گئی ہے۔
Description: http://164.100.117.97/WriteReadData/userfiles/image/PIC(4)(1)LRXY.jpeg
مذکورہ کم لاگت والا پی پی ای بھارتی بحریہ کے ایک ڈاکٹر نے وضع کیا ہے، جو حال ہی میں قائم کردہ انسٹی ٹیوٹ آف نیول میڈیسن (آئی این ایم) ممبئی کے اختراعی سیل میں تعینات ہے۔  نیول ڈاک یارڈ ممبئی میں پی پی ای کا ایک پائلٹ بیچ پہلے ہی تیار کیا جاچکا ہے۔
مذکورہ پی پی ای، جسے بحریہ نے وضع کیا ہے، ایک خصوصی ریشے سے تیار کیا گیا ہے، جس میں دیگر پی پی ای کے برخلاف سانس لینے یا ہوا کے گزر کے ساتھ تحفظ کا اعلی انتظام ہے۔ دیگر پی پی ای ،جو منڈی میں دستیاب ہیں، ان میں ہوا کا اتنا گزر نہیں ہے، لہذا یہ پی پی ای بھارت کی مرطوب آب وہوا جیسے حالات میں استعمال کے لیے زیادہ معقول اور مناسب ہے۔ اس ٹیکنالوجی کو آئی سی ایم آر سے منظور شدہ ٹسٹنگ تجربہ گاہ میں آزمائش کے عمل سے گزارا جاچکا ہے اور سند بھی دی جاچکی ہے۔
بحریہ ، آئی پی ایس ای اور این آر ڈی سی کی ایک بنیادی ٹیم اب اس لیے کوشاں ہے کہ اس کم لاگت والے پی پی ای کو بڑے پیمانے پر تیار کرنے کا عمل شروع کیا جائے۔ این آر ڈی سی کے جانب سے مستحق فرموں کی شناخت کی جارہی ہے، جو تیز رفتاری کے ساتھ پی پی ای کی تیاری کے لیے لائسنس حاصل کرسکیں۔ کورونا وائرس کے خلاف ایک اہم اور فوری ضرورت یہ ہے کہ ہراول دستے کے صحتی کارکنان اور پیشہ واران کو آرام دہ پی پی ای سے آراستہ کیا جائے، جسے قابل استطاعت لاگت پر زیادہ سرمایہ کاری کے بغیر اندرون ملک تیار کیا جاسکے۔ ایسی فرمیں/ اسٹارٹ اپ ادارے، جو باقاعدہ لائسنس لے کر اس پی پی ای کی تیاری میں دلچسپی رکھتی ہوں، وہ درج ذیل ویب سائٹ پر رابطہ قائم کرسکتے ہیں۔ cmdnrdc@nrdcindia.com.
بحریہ سے اختراع کاروں کی ایک ٹیم آئی پی ایف سی کے ساتھ قریبی تال میل بناکر کام کررہی ہے، جس کی تشکیل مشن رکشا گیان شکتی کے تحت عمل میں آئی تھی۔  نومبر 2018 میں اپنے آغاز سے لے کر مشن رکشا گیان شکتی کے تحت تقریبا 1500 آئی پی املاک فراہم کی جاچکی ہیں۔

COMMENTS

loading...
Name

Agra Article Bareilly Current Affairs Exclusive Hadees Interview Jalsa Madarsa News muhammad-saw Muslim Story National Politics Ramadan Slider Trending Topic Urdu News Uttar Pradesh Uttrakhand World News
false
ltr
item
TIMES OF MUSLIM: بھارتی بحریہ کے ذریعے وضع کیے گیے کم لاگت والے اختراعی پی پی ای کو پیٹنٹ کرانے کا عمل –بڑے پیمانے پر اس کی تیاری کا راستہ ہموارہوا
بھارتی بحریہ کے ذریعے وضع کیے گیے کم لاگت والے اختراعی پی پی ای کو پیٹنٹ کرانے کا عمل –بڑے پیمانے پر اس کی تیاری کا راستہ ہموارہوا
http://164.100.117.97/WriteReadData/userfiles/image/PIC(4)(1)LRXY.jpeg
TIMES OF MUSLIM
http://www.timesofmuslim.com/2020/05/blog-post_45.html
http://www.timesofmuslim.com/
http://www.timesofmuslim.com/
http://www.timesofmuslim.com/2020/05/blog-post_45.html
true
669698634209089970
UTF-8
Not found any posts VIEW ALL Readmore Reply Cancel reply Delete By Home PAGES POSTS View All RECOMMENDED FOR YOU LABEL ARCHIVE SEARCH ALL POSTS Not found any post match with your request Back Home Sunday Monday Tuesday Wednesday Thursday Friday Saturday Sun Mon Tue Wed Thu Fri Sat January February March April May June July August September October November December Jan Feb Mar Apr May Jun Jul Aug Sep Oct Nov Dec just now 1 minute ago $$1$$ minutes ago 1 hour ago $$1$$ hours ago Yesterday $$1$$ days ago $$1$$ weeks ago more than 5 weeks ago Followers Follow THIS CONTENT IS PREMIUM Please share to unlock Copy All Code Select All Code All codes were copied to your clipboard Can not copy the codes / texts, please press [CTRL]+[C] (or CMD+C with Mac) to copy