ہاپوڑ (سید اکرام)  جدید سائنس کی روشنی میں نماز ہی در اصل یوگا ہے جس کو مسلمان اگر سمجھ لیں تو ان کیلئے سب سے بڑی ریاضت اور عبا...



ہاپوڑ (سید اکرام) 
جدید سائنس کی روشنی میں نماز ہی در اصل یوگا ہے جس کو مسلمان اگر سمجھ لیں تو ان کیلئے سب سے بڑی ریاضت اور عبادت  اور ورزش نماز میں موجود ہے بشرط کہ وہ نماز کو نماز میں ہی پڑھے  یعنی وضو کے ارکان کی رعایت کرتے ہوئےجب نماز پڑھی جائےگی تو وہ نماز جہاں اس کیلئے عبادت ہے وہیں اس کیلئے بہترین صحت کا ضامن بھی ہے۔ ہاپوڑ میں فروغِ اردو زبان ٹرسٹ کے زیرِ نگرانی عالمی یومِ یوگاکا انعقاد کے موقع پر یوگا اسپیشلسٹ و ماہر ماحولیات ڈاکٹر عباس علی نے کہا کہ یوگا درا صل ایک ورزش ہے۔ انسان جب نیت باندھنے کیلئے دونوں ہاتھ اٹھا کر کانوں کی جڑوں پر انگوٹھے لگاتا ہے تو ایک خاص برقی رو کان کی جڑ میں موجود باریک رگ کو اپنا کنڈنسر بنا کر دماغ کی طرف جاتی ہے اور ان خلیوں کو چارج کرتی ہے جن کو شعور نظرانداز کررہا تھا اور جب یہ خلیے چارج ہوتے ہیں تو دماغ میں ایک روشنی کا جھماکر ہوتا ہے اور تمام اعصاب اس سے متاثر ہوکر دماغ کے اس خاص حصے کی طرف متوجہ ہوجاتے ہیں جن میں روحانی صلاحیتیں مخفی ہیں۔   انسان جب رکوع میں ہاتھوں کی انگلیوں سے گھٹنوں کو پکڑتا ہے تو انگلیوں کے اندر برقی رو گھٹنوں میں جذب ہوتی ہے جس سے گھٹنوں کے اندر صحت مند لعاب برقرار رہتا ہے جو جوڑوں کی تکلیف سے نجات کا سبب بنتا ہےدماغ کے اندر خیالات پیدا کرنے والی بجلی براہ راست زمین میں جذب ہوتی ہے اور بندہ لاشعوری طور پر کشش ثقل سے آزاد ہوجاتا ہے اور اس کا تعلق براہ راست رب کائنات سے ہوجاتا ہےنماز نہ صرف اضطراب اور ٹینشن میں کمی کا باعث بن سکتی ہے بلکہ رکوع کے دوران گھٹنوں اور سجدوں میں جوڑوں کے لیے بھی مددگار ثابت ہوتا ہے ۔دوسری طرف دماغ سے ایک برقی رو ہاتھوں میں منتقل ہوجاتی ہے اور جب دوسرے جنریٹر نفس (زیرناف) پر ہاتھ باندھتے ہیں تو ہاتھوں میں موجود کنڈنسر سے ذیلی جرنیٹر میں بجلی کا ذخیرہ ہوجاتا ہےجرنیٹر قلب کی طاقت ور حرارت اور کرنٹ ہاتھوں میں موجود کنڈنسر میں موجود برقی رو ایک خاص صحت بخش لہروں کو وجود ملتا ہےنماز پڑھنے والے مردو خواتین کے بچوں کے اندر براہ راست انوارات منتقل ہوتے ہیں اور جس کی وجہ سے بچوں میں رضا و تسلیم کی کیفیت‘ خوش رہنے کی عادت‘ سمجھ بوجھ‘ تفکرو تدبر کی صلاحیتیں بیدار ہوجاتی ہیں۔ پرو فیسر عباس علی نے کہا کہ جب پیراسائیکولوجی سے یہ بات ثابت ہوتی ہے کہ دماغی خلیوں اور برقی رو سے تمام اعصاب کا خاص تعلق ہے ان کے اثرات تمام اعصاب پر پڑتے ہیں‘ یہ برقی رو دماغی خلیوں سے باہر سرائیت کرتی ہے تو سینس جنم لیتی ہے جن میں دیکھنے‘ سونگھنے‘ چکھنے‘ چھونے کی حس شامل ہے جب یہ برقی رو دماغ سے چل کر ریڑھ کی ہڈی کے حرام مغز سے گزرتی ہوئی کمر کے آخری حصے میں داخل ہوتی ہے تو پورے اعصاب میں منقسم ہوکر حواس بنتے ہیں۔ نمازی جب رکوع میں جھکتا ہے تو سینس بنانے کا فارمولہ الٹ جاتا ہے یعنی حواس براہ راست ماسٹر مائنڈ کے تابع ہوجاتے ہیں دماغ یک سو ہوکر ایک نقطہ پر اپنی لہریں منعکس کرتا ہے حالتِ رکوع میں یک سوئی کیلئے پاؤں کے انگوٹھوں پر توجہ سے دیکھنے کا فائدہ ہوتا ہے کہ روح یہیں سے نکالنی شروع کی جائے گی۔ اسی طرح رکوع سے واپسی پر جب بندہ قیام کی طرف لوٹتا ہے تو دماغ کے اندر کی روشنیاں دوبارہ اعصاب میں تقسیم ہوتی ہیں اور انسان سراپا نور بن جاتا ہے۔ انہوں نےکہاکہ جدید سائنس کی روشنی میں انسان جب رکوع میں ہاتھوں کی انگلیوں سے گھٹنوں کو پکڑتا ہے تو انگلیوں کے اندر برقی رو گھٹنوں میں جذب ہوتی ہے جس سے گھٹنوں کے اندر صحت مند لعاب برقرار رہتا ہے جو جوڑوں کی تکلیف سے نجات کا سبب بنتا ہے۔ حاجی امین انصاری نے کہا کہ نماز میں ہی یوگا ہے اسلئے کہ یوگا سے جہاں ٹینشن اور جسمانی بیماریوں سے چھٹکارے کا سبب بتایا جارہا ہے وہیں پر نماز میں یہ تمام خوبیاں پہلے سے ہی موجود ہیں نماز پریشانی اور ٹینشن کو ختم کرسکتی ہے اور اس سے ہٹ کر عصبی اور عضلات کے مسائل میں موثر ہے۔ 
نماز میں حرکات یوگا کی طرح ہیں جیسے یوگا اور فیزیو تھراپی میں کمر کے درد کے لئے ورزش کی جاتی ہےاسی طرح نماز کی حرکات کے حوالے سے جدید طرز کی ورزش کا تقابل کیا گیا ہے ۔ ڈاکٹر خالد محمد خان نے کہا کہ یوگا میں ورزش ہم ظاہری طورپر محسوس کرتے ہیں جس میں اعصاب  اور سانس صاف اور بہتر بنانے کے طریقے ہیں لیکن اگر ہم  صحیح معنیٰ میں نماز جیسی عبادت کو انجام دیں تو یہ ہی نماز ہمارے لئے جہاں رابِ کائنات کی خوشنودی کا ذریعہ بنتا ہے وہیں پر   ہماری صحت بھی بہتر بنتی ہے  نماز ہمارے لئے کسی اکسیر سے کم نہیں ہے جب نمازی اپنی پیشانی صرف اللہ کیلئے زمین پر رکھ دیتا ہے اور تصور یہ ہو کر رب کریم کے قدموں پر سر رکھ دیا یہ وہ وقت ہوتا ہے جب تمام کائنات کی ہر شے اس کے سامنے جھک جاتی ہے یہ ہے اشرف المخلوقات کی شان۔ روشنی کی رفتار ایک لاکھ چھیاسی ہزار میل فی سیکنڈ ہے اور زمین کے گرد ایک سیکنڈ میں روشنی آٹھ بار چکر لگاتی ہے جب نمازی حالت سجدہ میں ہوتا ہے تو نمازی کے دماغ کی لہریں بھی زمین کے گرد سفر کرتی ایک لاکھ چھیاسی ہزار میل فی سیکنڈ کی رفتار سے کام کرتی ہیں اور پھر۔ پرو گرام کا آغاز علیٰ الصباح پانچ بجے کیا گیا ۔ اس پرو گرام میں حاجی امین انصاری ،انجینئر کامل عباس ،ماسٹڑ شارق نبی، وسیم سیفی چینا پوری، محمد عادل سلطان پور،فیصل خان، عرفان احمد راجپوت،  وغیرہ نے حصہ لیا  موسم نا موافق ہو نے کے سبب شعیب انور اور دیگر افراد اس پرو گرام میں شریک نہیں ہو سکے لیکن انہوں نے پرو گرام کو اہم قرار دیا  عالمی  یومِ یوگا پر ہاپوڑ کی اہم شخصیتوں نے اور جونوانوں نے اس اہم پرو گرام میں حصہ لیااور سوشل ڈسٹینسنگ کا بھی خاص خیال رکھتے ہوئے یوگا کے اصول وضوابط پر کئی گھنٹے تک یوگا کیا ۔ پرو فیسر عباس علی نے میدان میں موجود افراد پر یوگا کے اصول بتاتے ہوئے یوگا کرایا ۔ ڈاکٹر خالد محمد خان ، شارق نبی اور فیصل نے بھی یوگا کے ٹپس بتاتے ہوئے یوگا کرایا ۔ آئی ایم آئی ٹی کے بانی حاجی امین  انصاری نے بھی یوگا پرو گرام میں شرکت کر کے یوگا کیا ۔

COMMENTS

loading...
Name

Agra Article Bareilly Current Affairs Exclusive Hadees Hindi International Hindi National Hindi News Hindi Uttar Pradesh Home Interview Jalsa Madarsa News muhammad-saw Muslim Story National Politics Ramadan Slider Trending Topic Urdu News Uttar Pradesh Uttrakhand World News
false
ltr
item
TIMES OF MUSLIM
https://1.bp.blogspot.com/-22M3aFLeGRw/XvAr-mTl-5I/AAAAAAAAhxM/e0XfJxkmCFgwjuYp7v841RcJ_yEzJAeyQCLcBGAsYHQ/s640/IMG-20200621-WA0057.jpg
https://1.bp.blogspot.com/-22M3aFLeGRw/XvAr-mTl-5I/AAAAAAAAhxM/e0XfJxkmCFgwjuYp7v841RcJ_yEzJAeyQCLcBGAsYHQ/s72-c/IMG-20200621-WA0057.jpg
TIMES OF MUSLIM
http://www.timesofmuslim.com/2020/06/blog-post_205.html
http://www.timesofmuslim.com/
http://www.timesofmuslim.com/
http://www.timesofmuslim.com/2020/06/blog-post_205.html
true
669698634209089970
UTF-8
Not found any posts VIEW ALL Readmore Reply Cancel reply Delete By Home PAGES POSTS View All RECOMMENDED FOR YOU LABEL ARCHIVE SEARCH ALL POSTS Not found any post match with your request Back Home Sunday Monday Tuesday Wednesday Thursday Friday Saturday Sun Mon Tue Wed Thu Fri Sat January February March April May June July August September October November December Jan Feb Mar Apr May Jun Jul Aug Sep Oct Nov Dec just now 1 minute ago $$1$$ minutes ago 1 hour ago $$1$$ hours ago Yesterday $$1$$ days ago $$1$$ weeks ago more than 5 weeks ago Followers Follow THIS CONTENT IS PREMIUM Please share to unlock Copy All Code Select All Code All codes were copied to your clipboard Can not copy the codes / texts, please press [CTRL]+[C] (or CMD+C with Mac) to copy