آبروئے صحافت، شہنشاہ؍ قلم جناب عزیز برنی

( شکیلا سحر )  عزیز برنی صاحب کی شخصیت کسی تعارف کی محتاج نہیں ہے ۔  عزیز برنی جہان اردو کا ایک نایاب اور جانا مانا نام ۔ شہنش...

( شکیلا سحر ) 



عزیز برنی صاحب کی شخصیت کسی تعارف کی محتاج نہیں ہے ۔ 
عزیز برنی جہان اردو کا ایک نایاب اور جانا مانا نام ۔ شہنشاہ قلم، آبروئے صحافت، اردو کے سب سے بڑے میڈیا ( سہارا اردو میڈیا ) کے گروپ ایڈیٹر اور فاونڈر ایڈیٹر رہے چکے ہیں۰ اردو ہندی انگریزی زبان میں درجنوں کتابیں لکھ چکے ہیں ۔ اس میں ایک سے بڑھ کر ایک کہانیاں،  افسانے، ناولوں کا شمار ہے ۔ کئی فلموں کے لیے سکریپٹ بھی لکھ چکے ہیں ۔ حکومت ہند ، بھارت سرکار کے صلاح کار کے عہدے پر بھی رہ چکے ہیں ۔ اپنے تحاریر کے لیے ہاؤس آف کامنس ( بریٹیش پارلیمنٹ ) لندن مدعو کئے گئے ۔
ریاست اتر پردیش کے تاریخی شہر،  بلند شہر میں جناب عزیز برنی پیدا ہوئے ۔ آپکے والد صاحب کا نام ڈاکٹر عبدالحکیم خان چوہان تھا ۔ ابتدائی تعلیم میونسپل جونئیر ہائی اسکول اپر کوٹ میں حاصل کی ۔ ہائی اسکول مسلم انٹر کالج بلند شہر سے کی ، اسکے بعد مسلم علیگڑھ یونیورسٹی علیگڑھ اور اور جامیہ ہمدرد میڈیکل کالج دہلی میں تعلیم حاصل کی ۔ لیکن پڑھنے لکھنے اور صحافت کا شوق ڈاکٹری پیشے سے جوڑے نہ رکھ سکا - "مارلس آف محمد اینڈ آل محمد " ، " شیعزم ان ویو آف ٹروتھ " اور " فلاسفی آف پردا " جیسی مزہبی کتابوں کا انگریزی سے اردو اور ہندی میں ترجمہ کیا۔ پھر علی گڑھ سے شائع ہونے والے " النجات" اردو میگزین کی  ادارتی ذمہ داریاں سنبھالی ۔ 
ہانک کانگ سے شائع ہونے والے انگریزی میگزین " وکٹری " کے ہندوستان میں جنرل ایڈیٹر مقرر کیے گئے ۔ اسکے بعد اپنا اسلامی میگزین " پرچم قرآن " شروع کیا۔ 1987 کے فرقہ وارانہ فساد کے دوران میرٹھ میں موجود " پرچم قرآن " کا دفتر جلایا گیا اور یہ میگزین بند ہو گئ ۔
1990 میں ہندی ہفت روزہ " کمینٹیٹر " جاری کیا جو کہ سہارا انڈیا پریوار سے جڑنے تک رہا ۔ سہارا انڈیا پریوار میں ہندی روز نامہ کے زمیمہ ہستکشیپ کے انچارج رہے ۔ 1991 میں اردو مہانامہ ، میگزین راشٹریہ سہارا کے ایڈیٹر انچارج مقرر کئے گئے ۔ 1994 میں مہانامہ میگزین کو ہفتہ وار میں بدل دیا ۔ ایڈیٹر کی ذمہ داریاں بدستور عزیز برنی پر ہی رہی۔
تقریبا ایک برس تک سہارا انڈیا پریوار کی انگریزی میگزین " سہارا ٹائمز " کے بھی ایڈیٹر انچارج رہے ۔ 1991 میں اردو سہارا کی  کامیابی کے بعد اسے روز نامہ کی شکل دے دی گئ جسے پہلے لکھنو سے روز نامہ کی شکل میں پھر دہلی،  گورکھپور سے جاری کیا گیا ۔ تینوں جگہ کے ایڈیٹر انچارج کی ذمہ داری عزیز برنی صاحب کے سپرد کی گئ۔ 2003 آتے آتے " راشٹریہ سہارا اردو "  روز نامہ انڈیا کا سب سے زیادہ اشاعت والا اور مقبول روزنامہ بن چکا تھا ۔ ساتھ ہی " عالمی سہارا " کے نام سے بین الاقوامی معیار کا ہفت روزہ اور مہانامہ میگزین " بزم سہارا " بھی شائع کیا گیا ۔ اس کے ایڈیٹر انچارج بھی عزیز برنی ہی مقدر کئے گئے ۔ سہارا انڈیا پریوار کے چیئرمین جناب سبرت رائے سہارا نے اردو کی زبردست کامیابی سے متاثر ہو کر ممبئی،  کلکتہ، حیدرآباد  رانچی اور پٹنہ سے بھی روزنامہ جاری کرنے کا فیصلہ کیا اور سبھی اردو اشاعتوں کا  ایڈیٹر انچارج عزیز برنی کو ہی مقرر کیا۔
سہارا اردو چینل کے لیئے بھی بانی اور انچارج مقرر کئے گئے ۔ سیاست دانوں سے لیۓ گئے عزیز برنی کے انٹرویو " گفتگو " اور " سحر " کے نام سے کافی پسند کیئے گئے۔
صحافت کے ساتھ ساتھ عزیز برنی صاحب نے قلمکار کی حیثیت سے بھی اپنی شناخت قائم کی ۔ آپ کا قلم " دو لفظ " اردو میں اور " دو شبد " ہندی اخبار میں لگاتار شائع ہوتے رہے ۔ اس کے بعد "داستان ہند ماضی حال مسقبل" ،" مسلمانان ہند  ماضی حال مسقبل" اور" آزاد بھارت کا اتہاس" روز نامہ راشٹریہ سہارا اردو کے سبھی ایڈیشن میں تقریبا روز شائع ہوتا رہا ۔ آپ کی لکھی کتابوں میں" داستان ہند"،" چشمدید گواہ" ،" صدام سفر زندگی کا "،" کرییا پرتیکرییا،  وغیرہ کافی مقبول ہوئی۔
 اردو کے علاوہ ہندی اور انگریزی میں  India Lose Freedom,  Eye Witness,  Saddam president to prisoner,  Reaction of action 
کے نام سے شائع ہوئی ۔
عزیز برنی صاحب ایک ادیب کے طور پر بھی سامنے آئے ۔ آپ کا ناول " انتقام " کے نام سے شائع ہوا اور افسانوی مجموعہ " تحفہ " کے نام سے منظر عام پر آیا ۔ آپ کے دیگر ناول " میرے ہمسفر " ، "ونش"، "جہاد" ، " ادھورا خواب" ، "کوٹھے والی "، " آو لوٹ چلے" اور "کلنکنی" اردو اور ہندی میں زیر طباعت ہیں ۔  " کلیوگ" ، اور " جہاد " انگریزی میں بھی شائع کیے جا رہے ہیں ۔ 
آپ نے بہت سی ٹیلی فلم بنائی ۔ فلموں کے اسکرپٹ لکھیں ۔ ہندی فیچر فلم " بھارت بھاگیہ ودھاتا " ، " صدام حسین  سفر زندگی کا اور سیما پریہار کی زندگی پر بنی " زخمی " ( Woondend ) کی اسکرپٹ بھی لکھی ہے ۔ تین دیگر فیچر فلمیں پروڈکشن پروسیس میں ہیں ۔ 
عزیز برنی صاحب بہت سے اعجازات سے نوازے جا چکے ہیں ۔  مختلف اداروں،  انجمنوں سے وابستہ رہے ہیں ۔  ڈاکٹر ذاکر حسین  میموریل ٹرسٹ ( دہلی یونیورسٹی ) کے ٹرسٹی میمبر ہیں ۔ کیشو مہا ودیالیہ( دہلی یونیورسٹی ) کی گورنینگ باڑی کے ممبر بھی ہیں ۔ سائنس اور ٹیکنالوجی اور اوشین ڈیولمینٹ مینسٹری کے بھی صلاح کار رہے ہیں ۔ 2014 تک بھارت سرکار کی ایچ آر ڈی مینسٹری کے بھی صلاح کار رہ چکے ہیں ۔ این سی پی یو ایل کے اردو مہانامہ " اردو دنیا " کو نئی شکل دی ۔ اس کے علاوہ برنی میڈیا انسٹیٹیوٹ کے نام سے لکشمی نگر وکاس مارگ دہلی میں ایک میڈیا انسٹیٹیوٹ قائم کیا جہاں کمپوٹر ٹیکنالوجی اور اردو پبلیکیش کے ذریعے اردو میڈیا کے فروغ کو انجام دیا ۔
آپ نے بھارت سرکار کی طرف سے جارڈن میں نمائندگی کی ۔ سعودی حکومت کے خصوصی دعوت نامے پر سعودی عرب تشریف لے گئے اور ان کے شاہی مہمان رہیں ۔ امریکی حکومت کے دعوت نامہ پر اسٹیٹ گیسٹ کی  حیثیت سے امریکہ گئے ۔ اس کے علاوہ کینیڈا،  دوبئی،  شارجہ،  مصر،  ابو دھابی،  فرانس،  سوٹزرلینڈ،  ویسٹ انڈیز،  ملیشیا،  آسٹریلیا،  بیلجیئم پاکستان اور نیپال کا دورہ کیا ۔ ہاؤس آف کامنس( بریٹیش پارلیمنٹ ) لندن بھی مدعو کیئے گئے ۔ 
سہارا سے الگ ہو جانے کے بعد اپنا اردو اخبار " عزیز الہند " شروع کیا جو بہت مقبول ہوا ۔ اس بیج حیدرآباد کے مختار فردین  اور جھارکھنڈ کے ڈاکٹر حسن چشتی نے عزیز برنی صاحب کی صحافت پر ریسرچ کی ۔ اسی طرح لندن یونیورسٹی میں ریسرچ کرنے والی پرگیا سنگھ  عزیز برنی پر ریسرچ کر رہی ہے ۔
فرید بک ڈیپو، انڈین پبلیشر،  برنی میڈیا ہاوس نے عزیز برنی صاحب کے درجنوں کتابیں شائع کر چکے ہیں ۔ ان پر بنی ڈاکیومینٹری فلم " صحافت کا سنگ میل " کئی با ٹیلی ویژن پر دکھائی جا چکی ہے ۔ آج کل  آپ اپنی خودنشست اور درجنوں ناولوں کو مکمل کرنے میں مصروف ہیں ۔
عزیز برنی صاحب جن کے چاہنے والے صرف ہندوستان میں ہی نہیں بلکہ پوری دنیا میں موجود ہیں  اور ان کی تصانیف کو بےحد پسند کرتے ہیں ۔عزیز برنی صاحب کو دل کی عمیق  گہرائیوں سے سالگرہ کی مبارکباد اور بہت سی نیک خواہشات۔


اللہ تعالی آپکو ہمیشہ خوشیوں اور کامیابیوں والی زندگی سے نوازے آمین

COMMENTS

loading...
Name

Agra Article Bareilly Current Affairs DVNA Exclusive Hadees Hindi International Hindi National Hindi News Hindi Uttar Pradesh Home Interview Jalsa Madarsa News muhammad-saw Muslim Story National Politics Ramadan Slider Trending Topic Urdu News Uttar Pradesh Uttrakhand World News
false
ltr
item
TIMES OF MUSLIM: آبروئے صحافت، شہنشاہ؍ قلم جناب عزیز برنی
آبروئے صحافت، شہنشاہ؍ قلم جناب عزیز برنی
https://1.bp.blogspot.com/-Fx3TSRlTDjI/XuZGCnRx-WI/AAAAAAAAhnk/1u4AXTaT8IsJoQcLX7oote4MG5ArsMmFQCLcBGAsYHQ/s640/IMG-20200613-WA0075.jpg
https://1.bp.blogspot.com/-Fx3TSRlTDjI/XuZGCnRx-WI/AAAAAAAAhnk/1u4AXTaT8IsJoQcLX7oote4MG5ArsMmFQCLcBGAsYHQ/s72-c/IMG-20200613-WA0075.jpg
TIMES OF MUSLIM
http://www.timesofmuslim.com/2020/06/blog-post_562.html
http://www.timesofmuslim.com/
http://www.timesofmuslim.com/
http://www.timesofmuslim.com/2020/06/blog-post_562.html
true
669698634209089970
UTF-8
Not found any posts VIEW ALL Readmore Reply Cancel reply Delete By Home PAGES POSTS View All RECOMMENDED FOR YOU LABEL ARCHIVE SEARCH ALL POSTS Not found any post match with your request Back Home Sunday Monday Tuesday Wednesday Thursday Friday Saturday Sun Mon Tue Wed Thu Fri Sat January February March April May June July August September October November December Jan Feb Mar Apr May Jun Jul Aug Sep Oct Nov Dec just now 1 minute ago $$1$$ minutes ago 1 hour ago $$1$$ hours ago Yesterday $$1$$ days ago $$1$$ weeks ago more than 5 weeks ago Followers Follow THIS CONTENT IS PREMIUM Please share to unlock Copy All Code Select All Code All codes were copied to your clipboard Can not copy the codes / texts, please press [CTRL]+[C] (or CMD+C with Mac) to copy