تعزیتی جلسے

  علی گڑھ، 6 مئی: علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے شعبہ نفسیات اور شعبہ تاریخ کی جانب سے الگ الگ تعزیتی جلسوں کا اہتمام کیا گیا اور حال ہی میں فوت ...


 

علی گڑھ، 6 مئی: علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے شعبہ نفسیات اور شعبہ تاریخ کی جانب سے الگ الگ تعزیتی جلسوں کا اہتمام کیا گیا اور حال ہی میں فوت ہونے والے موجودہ و سابق اساتذہ اور دیگر مرحومین کو خراج عقیدت پیش کیا گیا۔

شعبہ نفسیات کی جانب سے منعقدہ آن لائن پروگرام میں صدر شعبہ پروفیسر پروفیسر کنور ساجد علی خان، سبکدوش پروفیسر ڈاکٹر سعید الظفر اور سبکدوش اسٹوڈنٹس کاؤنسلر وصی اللہ کی خدمات کو یاد کرتے ہوئے خراج عقیدت پیش کیا گیا۔ 

پروفیسر اکبر حسین نے کہا کہ پروفیسر سعیدالظفر اور کنور ساجد علی خان اچھے اساتذہ تھے جو اپنے طلبہ کے لیے خیرخواہی کا جذبہ رکھتے تھے۔ مسٹر وصی اللہ کو بھی سبھی محبت سے یاد رکھیں گے۔ 

پروفیسر نعیمہ خاتون، پرنسپل، ویمنس کالج نے کہا کہ پروفیسر ساجد کو وہ ان کی طالبعلمی کے زمانہ سے جانتی تھیں اور ان سے ان کے اچھے مراسم تھے ۔ 

کارگزار صدر شعبہ پروفیسر اسماء پروین نے بھی رنج و افسوس کا اظہار کرتے ہوئے كنبہ کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔ 

آن لائن پروگرام میں ریسرچ اسکالروں، طلبہ اور غیر تدریسی عملے کے اراکین نے بھی شرکت کی۔

دوسری طرف شعبہ تاریخ کی آن لائن تعزیتی میٹنگ میں شعبہ کے اساتذہ نے اپنے رفقاء ڈاکٹر جبرئیل، ڈاکٹر ایم سراج انور، ڈاکٹر عزیز فیصل، ڈاکٹر محمد عباس مہدی، محترمہ حجازیہ، اور بحور محمد کو خراج عقیدت پیش کیا۔ 

صدر شعبہ پروفیسر گلفشاں خان نے میٹنگ کی صدارت کرتے ہوئے کہا کہ میں شعبہ تاریخ کے اپنے رفقاء کی رحلت پر رنج وغم کا اظہار کرتی ہوں۔ شعبہ میں اُن کی کمی محسوس کی جائے گی۔ 

پروفیسر بی ایل بھدانی، ڈاکٹر راجندر کمار، ڈاکٹر نتن گوئل، ڈاکٹر رتیش ویاس، ڈاکٹر منورما اپادھیائے ( راجستھان) اور ڈاکٹر مینک کمار (دہلی یونیورسٹی) وغیرہ میٹنگ میں شریک ہوئے۔ 

ڈاکٹر جبرئیل شعبہ تاریخ میں اسسٹنٹ پروفیسر تھے۔ انہوں نے جامعہ ملیہ اسلامیہ اور دہلی یونیورسٹی کے کروڑی مل کالج اور شیوا جی کالج میں بھی پڑھایا تھا۔ 

ڈاکٹر ایم سراج انور این سی ای آر ٹی میں پروفیسر تھے۔ انہوں نے اے ایم یو سے ایم فل اور پی ایچ ڈی کی تھی اور اے ایم یو میں عارضی طور سے کچھ دنوں تک تدریسی فرائض بھی انجام دیے تھے۔ 

ڈاکٹر عزیز فیصل سنٹر فار ويمنس اسٹڈیز میں اسسٹنٹ پروفیسر تھے۔ انہوں نے شعبہ تاریخ میں بھی تدریسی فرائض انجام دیے۔ 

ڈاکٹر محمد عباس مہدی ایمٹی یونیورسٹی، لکھنو سے وابستہ تھے۔ انہوں نے شعبہ تاریخ اے ایم یو سے پی ایچ ڈی کی تھی۔

محترمہ حجازیہ بیگم اے ایم یو گرلس اسکول میں استاد تھیں۔ جب کہ بحور محمد نے شعبہ تاریخ میں آفس اٹنڈنٹ کے طور پر بیس سال تک کام کیا۔


COMMENTS

loading...
Name

Agra Article Bareilly Current Affairs DVNA Exclusive Hadees Hindi International Hindi National Hindi News Hindi Uttar Pradesh Home Interview Jalsa Madarsa News muhammad-saw Muslim Story National Politics Ramadan Slider Trending Topic Urdu News Uttar Pradesh Uttrakhand World News
false
ltr
item
TIMES OF MUSLIM: تعزیتی جلسے
تعزیتی جلسے
https://1.bp.blogspot.com/-Qz308VGSeok/YJPv1q75hQI/AAAAAAAArUo/VxaOo5tq5Sc9X8JxcqFxJKRe-Jyee102ACLcBGAsYHQ/s320/Dept%2Bof%2BPsychology%2BCondolence%2BMeet.jpg
https://1.bp.blogspot.com/-Qz308VGSeok/YJPv1q75hQI/AAAAAAAArUo/VxaOo5tq5Sc9X8JxcqFxJKRe-Jyee102ACLcBGAsYHQ/s72-c/Dept%2Bof%2BPsychology%2BCondolence%2BMeet.jpg
TIMES OF MUSLIM
https://www.timesofmuslim.com/2021/05/blog-post_90.html
https://www.timesofmuslim.com/
http://www.timesofmuslim.com/
http://www.timesofmuslim.com/2021/05/blog-post_90.html
true
669698634209089970
UTF-8
Not found any posts VIEW ALL Readmore Reply Cancel reply Delete By Home PAGES POSTS View All RECOMMENDED FOR YOU LABEL ARCHIVE SEARCH ALL POSTS Not found any post match with your request Back Home Sunday Monday Tuesday Wednesday Thursday Friday Saturday Sun Mon Tue Wed Thu Fri Sat January February March April May June July August September October November December Jan Feb Mar Apr May Jun Jul Aug Sep Oct Nov Dec just now 1 minute ago $$1$$ minutes ago 1 hour ago $$1$$ hours ago Yesterday $$1$$ days ago $$1$$ weeks ago more than 5 weeks ago Followers Follow THIS CONTENT IS PREMIUM Please share to unlock Copy All Code Select All Code All codes were copied to your clipboard Can not copy the codes / texts, please press [CTRL]+[C] (or CMD+C with Mac) to copy